‘حکومت ریاست مدینہ کے نام پر عوام کو بے وقوف بنا رہی ہے’

JUI-F-Molana-Fazlur-Rehman.jpg

جمعیت علماء اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت مغربی ایجنڈے پر عمل درآمد کر نے کی کوشش اور ریاست مدینہ کا نام لیکر عوام کو بیوقوف بنارہی ہیں۔

اتوار کے روز پشاور میں مولانا بجلی گھر مرحوم کی یاد میں منعقدہ سالانہ کانفرس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ملک سلیکٹیڈ حکمرانوں کی ناقص پالیسیوں کی وجہ سے اقتصادی اور معاشی طور پرمکمل دیوالیہ ہوچکا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ علما ء کرام کی قربانیوں کی وجہ سے سامراجی قوتوں سے آزادی ملی، جے یو آئی اپنے اکابرین کے مشن کو زندہ رکھتے ہوئے سامراج کے ایجنٹوں کے خلاف جنگ جاری رکھیں گی، ملک بھر میں ملین مارچ میں عوام کی والہانہ شرکت حکمرانوں کی غیر اسلامی اقدامات پر عدم اعتماد ہے۔

مولانا فضل الرحمن کا کہنا تھا کہ اسرائیل کو تسلیم کرنے، ختم نبوتؐ کے قانون کو چھیڑنے اور قادیانیوں کو کھلی چھٹی دے کر حکمران مغربی ایجنڈے پر عمل درآمد کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

جمعیت علماء کے سربراہ نے کہا کہ موجودہ حکومت کی اسلام دشمنی کو بے نقاب کرنے کے لیے میدان عمل میں اتر چکے ہیں، سندھ، پنجاب، بلوچستان اور خیبر پختونخوا کے ملین مارچ کے بعد اسلام آباد کا ملین مارچ حکومت کو گھٹنے ٹیکنے پر مجبور کر دیں گا۔

انہوں نے کہا کہ سلیکٹڈ حکمرانوں نے ملک کو اقتصادی و معاش طور دیوالیہ کردیا اور خود در بدر بھیک مانگ رہے ہیں، موجودہ وزیراعظم نے کہا تھا کہ ہم کچکول کو توڑدینگے ملک اپنے وسائل سے چلائیں گے مگر آج خود پوری دنیا میں کچکول لیکر ملک کومزید مقروض بنایا جارہا ہے۔

کانفرنس سے قاری عزیز الرحمان،مولانا انوارالحق ،مفتی کفایت اللہ ،مفتی شہاب الدین پوپلزئی عبدالجلیل جان اور مفتی محمد قاسم بجلی گھر نے بھی خطاب کیا۔