ڈیرہ اسماعیل خان میں کوئٹہ سے براستہ ژوب اور درابن پورے ملک میں روزانہ150ٹرالر ایرانی ڈیزل سمگل

37af8243-53cc-4507-99a9-cd49ea7b672e.jpg

ڈیرہ اسماعیل خان:غیر قانونی پیٹرولیم ایجنسیز(ڈبہ سٹیشن)کو فی الفو ربند کرنے، یومیہ60لاکھ لیٹر ایرانی ڈیزل کی سمگلنگ روکنے، اوگرا سے ایک لیٹر پیٹرول و ڈیزل پر10سے12روپے کمیشن مقرر کرنے اورآئی ڈی او ڈیرہ اسماعیل خان عارف اللہ گنڈہ پور کی جائیداد کی انکوائری اور تبادلے کے مطالبات

پر آل کے پی کے پیٹرولیم پمپ اونرز ایسوسی ایشن کے زیر اہتمام صوبائی صدر حاجی جان عالم محسودکی قیادت میں مقامی ہوٹل میں جلسہ اور جی پی او چوک سے ریسکیو15چوک تک احتجاجی ریلی ، نعرہ بازی، اگر ہمارے مطالبات پورے نہ ہوئے تو جلد ہی اسلام آباد مارچ کرینگے۔

آل کے پی کے پیٹرولیم پمپ اونرز ایسوسی ایشن کے زیر اہتمام صوبائی صدر حاجی جان عالم محسودکی قیادت میںپام بیچ ہوٹل پرڈیرہ اسماعیل خان ریجن، کوہاٹ ریجن، میانوالی ریجن اور بھکر ریجن کا مشترکہ احتجاجی جلسہ منعقد ہوا .

جس میں چاروں ریجنز کے عہدیداران اور ممبران نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔ بعدازاں شرکاء نے جی پی او چوک سے ریسکیو15چوک تک احتجاجی ریلی نکالی اور نعرے بازی کی۔

اس موقع پر صوبائی صدر حاجی جان عالم محسود نے کہا کہ انتظامیہ غیر قانونی پیٹرولیم ایجنسیز(ڈبہ سٹیشن)کو فی الفو ربند کرائے۔ڈیرہ اسماعیل خان میں 660سے زائد، وانا میں1050،بنوں ریجن میں12سو 13سو، کوہاٹ ریجن میں5سوسے6سو تک غیر قانی پیٹرولیم ایجنسیاں ہیں جبکہ بھکر اور میانوالی میں یہ ایجنسیاں بھری پڑی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کوئٹہ سے براستہ ژوب اور درابن پورے ملک میں روزانہ150ٹرالر ایرانی ڈیزل سمگل ہوکر آرہا ہے جو تقریباً یومیہ60لاکھ لیٹر ایرانی ڈیزل بنتا ہے، انتظامیہ ایرانی ڈیزل کی سمگلنگ کو فی الفور روکے۔

اوگرا سے اپیل ہے کہ پیپسی کی ایک بوتل پردس روپے سے12 روپے کمیشن ہے لہذاایک لیٹرپیٹرول و ڈیزل پر بھی اسی تناسب سے کمیشن مقرر کی جائے۔ اسسٹنٹ کمشنرز مختلف حیلے بہانوں سے پیٹرول پمپ مالکان کو بھاری جرمانے عائد کرتے ہیں جبکہ بھتہ وصول کرکے غیر قانونی پیٹرولیم ایجنسیاں کھلے عام رہائشی علاقوں میں پیٹرول بم کا کردار ادا کر رہی ہیں ان کیخلاف بھی کاروائی کی جائے۔

انہوں نے کہا کہ ڈیپوٹیشن پر دیگر محکمہ سے آنیوالے انڈسٹریل ڈیویلپمنٹ آفیسر عارف اللہ گنڈہ پور جو محکمہ کیلئے نقصان دہ ہے، اس نے کمائی کیلئے2010میں ہائیکورٹ سے لائسنس کے اجراء پر پابندی کے باوجود پیٹرولیم ایجنسیوں کو مٹی کے تیل کی فروخت کی آڑ میں فارم Kکے نام پرغیر قانونی پیٹرولیم ایجنسیوں کے لائسنس جاری کررہا ہے، یہ سلسلہ بند ہونا چاہئے اور موصوف کی اٹل شریف میں خریدی گئی 6ہزار کنال اراضی کی تحقیقات کی جائیں۔

انہوں نے کہا کہ اگر ہمارے مطالبات منظور نہ ہوئے تو اسلام آباد کی جانب مارچ کرینگے۔