قبائلی اضلاع کے سرکاری ملازمین کو اے جی آفس کے ذریعے تنخواہ دینے کے فیصلے

5c6695dadacc8-2.jpg

ذرائع کے مطابق اس سے قبل قبائلی ملازمین کو تنخواہیں پولٹیکل انتظامیہ کے آفسز سے ملتی تھی تاہم صوبے میں ضم ہونے کے بعد ایپکس کمیٹی کی سفارشات کی روشنی میں اب قبائلی ملازمین کو تنخواہیں اے جی آفس کے ذریعے دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

ضم ہونے والے قبائلی اضلاع میں خیبر پختونخوا پولیس، محکمہ صحت اور تعلیم سمیت مختلف محکموں کے ملازمین کی تفصیلات متعلقہ ڈیپارٹمنٹ اور پولٹیکل ایجنٹ سے بھی طلب کی گئی ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ قبائلی اضلاع میں بھوت ملازمین کی ایک بڑی تعداد بھی موجود ہے اور اس طرح بھوت ملازمین کا خاتمہ بھی ہو جائیگا۔

اے جی آفس کے ذریعے تنخواہوں کی ادائیگی کے معاملے پر بعض قبائلی ملازمین نے تحفظات کا اظہار بھی کیا ہے تاہم حکومتی رولز کے مطابق اس اقدام سے ملازمین کی تنخواہوں کے فنڈز کا بھی پتہ لگے گا جبکہ درجنوں بھوت ملازمین بھی فارغ ہو جائیں گے۔