جنوبی وزیرستان میں لیشمینیاء کیساتھ ساتھ ڈینگی پھیلنےکا شدید خطرہ

0810270d-6e08-48a4-9bd9-82d48aa70b89-780x405-1.jpg

جنوبی وزیرستان میں ڈینگی پھیلنے کا خدشہ. گزشتہ ایک سال سے اسپرے نہ ہونے کیوجہ سے لیشمینیاء کیساتھ ساتھ ڈینگی کا بھی خطرہ.


جنوبی وزیرستان کے محسود احمدزیی وزیر قبایل نے کہا کہ ڈسٹرکٹ ہیلتھ افسر نے جب سے چارج لیا ہے اس وقت سے لیکر ابھی تک کسی بھی علاقے میں مچھر مار اسپرے یا دیگر اختیاطی اقدامات نہیں کیے گیے .

جس کیوجہ سے گزشتہ ایک سال کے دوران ایک ہزار تک لوگ لیشمیناء کے مرض میں مبتلاء ہو چکے ہیں اور لیشمینیاء وباء کی شکل اختیار کر چکا ہے.

قبایلی عمایدین کا کہنا تھا کہ پشاور میں ڈینگی وایرس کے کافی کیس سامنے آیے جسکیوجہ سے پورہ صوبہ خطرے سے محفوظ نہیں مگر ہمارے علاقے میں مچھر مات اسپرے اور دیگر حفاظتی اقدامات نہ کرنے کیوجہ سے ڈینگی وایرس پھیلنے کا شدید خطرہ محسوس کیا جاتا ہے.

قبایلی عمایدین کا کہنا تھا کہ ڈی ایچ او اور انکے ٹیم کو چند ماہ قبل لاکھوں روپے مالیت کے اسپرے اور مچھر دانیاں صوبایی حکومت نے دی تھی مگر موصوف نے عوام میں تقسیم کرنے کی بجایے اسکے کلرک نے مبینہ طور فروخت کردیا .

قبایلی عمایدین کا کہنا تھا کہ وزیر صحت اور سیکرٹری صحت خیبر پختون خواہ سے مطالبہ کرتے ہے کہ موجودہ ڈی ایچ او کو معطل کرکے انکے خلاف تحقیقات کیے جاہے اور جنوبی وزیرستان میں ایمان دار افسر کو تعینات کیا جایے