متاثرین کے لیئے ریٹرن کیش گرانٹ کی مد میں 22 کروڑ روپے جاری ۔ایف ڈی ایم اے

pic_1492689185-1.jpg

پراونشیل ڈیزاسٹر مینجمینٹ اتھارٹی ( پی ڈی ایم اے ) کے کمپلیکس ایمرجنسی ونگ ( سابقہ ایف ڈی ایم اے) نے قبائلی اضلاع کُرم ، اورکزئی اور ایف ار ٹانک کے مارچ 2015 سے پہلے اپنے اپنے علاقوں کو واپس جانے والے متائثرین کے لئےریٹرن کیش گرانٹ کی صورت میں تقریباً 22 کروڑ روپے کے فنڈز ریلیز کرنے کا فیصلہ کیا ہے,.

جس سے مذکورہ علاقوں کے ساڑھے اٹھ ہزار سے زائد وہ خاندان مستفید ہونگے جو نادرا سے تصدیق شدہ ہوں اور باقاعدہ رضاکارانہ واپسی فارمز کو پُر کرکے واپس جا چکے ہیں ۔ سابقہ ایف ڈی ایم اے اور موجودہ کمپلیکس ایمرجنسی ونگ کے ترجمان نے میڈیا کو جاری کردہ ایک بیان میں اس بات کی تصدیق کرتے ہو ئے بتایا ہے .

کہ اس بارے میں کُرم، اورکزئی، ایف ار ٹانک اور جنوبی وزیرستان کے ڈپٹی کمشنرز ، ڈی ڈی ایم اوز اور مذکورہ علاقوں میں متعین کمپلیکس ایمرجنسی ونگ کے ڈسٹرکٹ کوارڈینیٹرز کو لکھے گئے مراسلے میں کہا گیا ہے کہ مذکورہ علاقوں کے ایسے تمام متائثرین خاندان جن کی واپسی رضاکارانہ واپسی فارمز کے ذریعے سے مارچ 2015 سے پہلے ہو ئی تھی اور جن کو واپسی کے وقت دی جانے والی 25000 کی نقد امداد نہیں ملی تھی .

کیونکہ اس وقت اس قسم کی امداد کسی کو نہیں دی جارہی تھی تاہم سابقہ ایف ڈی ایم اے نے ان واپس شدہ متائثرین کے ساتھ انسانی ہمدردی کے جذبے کے تحت ان کیلئے فنڈز کا مطالبہ کیاجس کی منظوری کے بعد مذکورہ بالا متائثرین کو فی خاندان 25000 روپے بطور ریٹرن کیشن گرانٹ دئے جائینگے ۔

جس کیلئے مجموعی طور پر 22 کروڑ کے قریب فنڈز ریلیز ہو چکے ہیں ۔مراسلےمیں ان تمام علاقوں کے واپس شدہ اور تصدیق شدہ خاندانوں کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ رقم کی بذریعہ سم کارڈ وصولی کیلئے اپنے اپنے قریبی فرنچائز سے رابطہ کرکے سم کارڈ حاصل کریں تاکہ ان کو رقم کی وصولی میں کسی قسم کی دشواری کا سامنا نہ ہو۔

اسسٹنٹ ڈائریکٹر ائی سی ٹی نے اس موقع پر بتایا کہ مذکورہ تمام خاندانوں کی لسٹیں متعلقہ ڈپٹی کمشنرز کو بھی ارسال کی گئی ہیں اور کمپلیکس ایمرجنسی ونگ کے ویب سائٹ پر بھی موجود ہیں جہاں سے مذکورہ علاقوں کے متائثرین خاندان اپنے اپنے سٹیٹس کی تصدیق کرسکتے ہیں ۔