میرعلی میں سیمنٹ لانے والے ٹرکوں سے غیر قانونی ٹیکس کی وصولی کی جارہی ہے۔ال وزیرستان سمینٹ ڈیلرز ایسوی ایشن

میرانشاہ : شمالی وزیرستان کے مین شاہراہ پر میرعلی بنوں روڈ ایپی کے مقام پر سیمنٹ لانے والے ٹرکوں سے دن دیہا ڑے غیر قانونی ٹیکس وصول کیا جانے لگا جبکہ مقامی انتظامیہ نے ایسے کسی بھی واقعے سے مکمل لاعلمی ظاہر کی ہے ۔
ال وزیرستان سمینٹ ڈیلرز ایسوی ایشن کی طرف سے ڈپٹی کمشنر شمالی وزیرستان کو لکھے گئے ایک درخواست میں کہا گیا ہے کہ ایپی کے مقام پر ایک مقامی ہوٹل کے قریب کچھ افراد نے خود ساختی چیک پوسٹ قائم کیا ہوا ہے جو ہر انے والے چھوٹے ٹرک سے 300سے لیکر 500تک جبکہ بڑی گاڑیوں اور ٹریلر سے ایک ہزار روپے تک ٹیکس لیتے ہیں جو کہ مکمل طور پر غیر قانونی اور غیر ائینی ہے تاہم مقامی انتظامیہ کو کئی بار شکایات کے باوجود ابھی تک کسی قسم کا ایکشن نہیں لیا گیا جس کی وجہ سے کسی بھی قسم کا تصادم رونما ہوسکتا ہے ۔
اس بارے میں رابطہ کرنے پر ڈپٹی کمشنر شمالی وزیرستان ناصر خان مہمند نے مشرق کو بتا یا کہ ابھی تک کسی نے اس بارے میں کسی قسم کی کوئی شکایت نہیں کی ہے ۔ انہوں نے ایسے کسی بھی چیک پوسٹ کی موجودگی کو یکسر مسترد کرتے ہوئے کہا کہ اگر کسی کو اس قسم کی کوئی شکایت ہے تو وہ ڈی پی او سے رابطہ کرسکتے ہیں کیونکہ اس قسم کی چیزیں اب ڈپٹی کمشنر کے ساتھ نہیں بلکہ پولیس کے دائرئہ اختیار میں اتے ہیں لہذا ان کو چاہئے کہ وہ پولیس کے ساتھ رابطہ کریں ۔