خیبرپختونخوا میں ایک ہی دن 5 بچوں میں پولیو وائرس کی تصدیق

What-is-polio-Vaccine-information-and-symptoms-724440-1.jpg

خیبرپختونخوا، تین اضلاع کے پانچ بچوں میں پولیو وائرس کی تصدیق.
بدھ کو پانچ مزید بچوں میں اس مہلک مرض کے وائرس کی تصدیق ہوئی ہے جس میں ایک چارسدہ سے، تین ضلع بنوں اور ایک کیس شمالی وزیرستان سے سامنے آیا ہے۔ متاثرہ بچوں میں تین لڑکیاں اور دو لڑکے ہیں اور ان کی عمریں آٹھ ماہ سے 36 ماہ کے درمیان ہیں۔

ایمرجنسی آپریشن سنٹر کے مطابق صوبہ میں پولیو کیسز سامنے آنے کی بڑی وجہ انکاری والدین ہیں۔ ایمرجنسی آپریشن سنٹر نے والدین سے التماس کی ہے کہ کہ وہ پولیو مہمات میں پولیو ٹیموں کا ساتھ دیں تاکہ ان کے بچے تاعمرمعذوری سےمحفوظ رہیں۔ ایمرجنسی آپریشن سنٹر نے کہا ہے کہ والدین منفی پروپیگنڈا پر کان نہ دھرے بلکہ اپنے بچوں کو معذور ہونے سے بچائے

اس سال اب تک پاکستان سے کل 53 بچوں میں اس وائرس کی تصدیق ہو چکی ہے جس میں 30 بچے بنوں ڈویژن میں متاثر ہوئے ہیں اور حکام کے مطابق ان میں 95 فیصد ایسے بچے سامنے آئے ہیں جن کے انگلیوں پر صرف نشان لگائے گئے ہیں اور اصل میں وائرس سے بچاؤ کے قطرے نہیں دیے گئے۔

خیبر پختونخوا کے بیشتر اضلاع میں پولیو کا وائلڈ وائرس موجود ہے اور بچوں کو اس وائرس سے بچاؤ کے قطرے دینے سے انکار کرنے والے والدین تقریباً ہر ضلع میں موجود ہیں۔ لیکن اس سال اب تک سب سے زیادہ بچے بنوں ڈویژن میں متاثر ہوئے ہیں۔