غلام خان سرحد پر خوست کے آئی ڈی پیز اور سول وعسکری حکام کا اہم جرگہ

شمالی وزیرستان میں غلام خان سرحد پر خوست کے آئی ڈی پیز مشران اور سول و عسکری حکام کا اہم جرگہ منعقد ہوا۔ جرگے میں متاثرین کی واپسی کیلئے مشران کو واپسی کے فارم حوالے کردیئے گئے۔

جرگہ ممبران کے مطابق متاثرین ایک ہفتے کے اندر فارم پر کرکے واپس بھیجیں گے۔ جرگے کے دوران افغانستان پلٹ متاثرین کیلئے بکاخیل کیمپ جانے کی شرط ختم کرنے کا بھی فیصلہ کیاگیا۔

جرگے کے مطابق جن متاثرین کا اپنا علاقہ کلیئر ہے وہ اپنے گھروں جبکہ باقی رشتہ داروں کے ہاں قیام کرسکتے ہیں جبکہ جو متاثرین بکاخیل کیمپ جانا چاہے ان کو وہاں بھیجا جائے گا۔

ذرائع کے مطابق اس دوران فیصلہ ہوا کہ متاثرین اپنے ساتھ مال مویشی اور سامان بھی لاسکتے ہیں جبکہ متاثرین کی گاڑیوں کے حوالے سے 11 کور سے منظوری لی جائے گی۔

حکام کے مطابق آپریشن ضرب عضب کے دوران تقریباً 12 ہزار گھرانے افغانستان ہجرت کرگئے تھے جن میں سے قریبا 9 ہزار خاندانوں کی واپسی ہوچکی ہے۔